مرکز کی سرگرمیاں

Children categories

مرکزی جمعیت اہل حدیث ہند کی مجلس عاملہ کا اہم اجلاس اختتام پذیر ملک وملت وانسانیت سے متعلق مسائل زیر غور

مرکزی جمعیت اہل حدیث ہند کی مجلس عاملہ کا اہم اجلاس اختتام پذیر ملک وملت وانسانیت سے متعلق مسائل زیر غور (0)

۳۴ویں آل انڈیا اہل حدیث کانفرنس بنگلور میں
نئی دہلیـ۱۹مارچ۲۰۱۷ء
مرکزی جمعیت اہل حدیث ہند کی پریس ریلیز کے مطابق آج مورخہ۱۹مارچ۲۰۱۷ء کو مرکزی جمعیت اہل حدیث ہند کی مجلس عاملہ کا ایک اہم اجلاس زیر صدارت جناب حافظ محمد عبدالقیوم نائب امیر مرکزی جمعیت اہل حدیث ہند بمقام اہل حدیث کمپلیکس، اوکھلا، نئی دہلی منعقد ہوا جس میں تقریبا ۲۱ صوبوں سے بڑی تعداد میں اراکین مجلس عاملہ ومدعوئین خصوصی نے شرکت کی۔ اور ملک وملت نیزجماعت کو درپیش مسائل کاجائزہ لیا ۔ناظم عمومی مولانا اصغر علی امام مہدی سلفی مرکزی جمعیت اہلحدیث ہند کی ہمہ جہت دعوتی، تعلیمی، ملی وانسانی خدمات سے متعلق رپورٹ اور ناظم مالیات الحاج وکیل پرویز صاحب نے سالانہ حساب کتاب پیش کیا جس پر موقر اراکین نے اظہار اطمینان و مسرت فرمایا۔ اجلاس میں من جملہ دیگر امور کے طے پایا کہ ۳۴ویں آل انڈیا اہل حدیث کانفرنس بنگلور میں ہوگی۔ نیز یہ کہ صوبائی جمعیات کے انتخابات وقت کے اندر ہوں۔جمعیت کی تعمیر وترقی کے لیے منصوبے زیر غور آئے۔ اتفاق رائے سے کئی اہم ملی، ملکی اور جماعتی حالات کے پیش نظر فیصلے کئے گئے اور کافی غور وخوض کے بعد ملک وملت اور انسانیت سے متعلق درج ذیل قرار دادیں پاس کی گئیں۔

sمجلس عاملہ کی قرارداد میں اسلامی تعلیمات کے مطابق زندگی گزارنے اور برادران وطن کو اسلامی تعلیمات سے روشناس کرانی، امن وشانتی کا پیغام عام کرنے ،بھائی چارہ وقومی یکجہتی کے کوشش کرنے پر زوردیاگیا۔اجلاس میںبابری مسجد قضیہ کے جلد ازفیصل کرانے ، بے قصور مسلم نوجوانوں کو ہراساں کرنے والے خاطی پولس افسران کو قانون کے دائرے میں لانے اور ملک میں بڑھتی مہنگائی پر قابو پانے کی اپیل کی گئی ہے۔ علاوہ ازیں برادران وطن اورمسلمانوں سے اپیل کی گئی ہے کہ وہ شراب نوشی ودیگر منشیات سے پرہیز کریں اورنوجوانوں میں پائی جانے والی اخلاق باختہ برائیوں کو دور کرنے کے لئے مخلصانہ کوشش کریں۔
مجلس عاملہ کی قرارداد میں انسداد فرقہ وارانہ فساد بل کو پاس کرانے اور انتظامیہ کو فسادات میں جواب دہ بنانے کی اپیل اور ملک میں عصمت دری کے واقعات پر اظہار تشویش کیا گیاہے۔ قرار داد میں پولس اورنیم فوجی دستوں میں مسلم نمائندگی کویقینی بنانے کے حکومتی فیصلہ کا خیر مقدم کیا گیاہے۔ مسلمانوں کے خلاف دھمکی آمیز و نفرت انگیز بیانات پراظہار تشویش کیا گیا۔اجلاس میںجماعت کے اندر انتشار وخلفشار پیداکرنے والوں اورتنظیمی امور کو سبوتاژ کرنے والوںنیزجمعیت کے ذمہ داران پربے سروپاالزام لگانے والوں کی بھی مذمت کی گئی اور وسیع تر جماعتی مفادات کے پیش نظرانہیں اپنی حرکتوں سے باز رہنے کی تلقین کی گئی۔
مجلس عاملہ کی قرارداد میں داعش اور اس کی دہشت گردی کی مذمت اور مرکزی جمعیت اہل حدیث ہند کے زیراہتمام ’’داعش اوردہشت گردی کی بیخ کنی میں قومی یکجہتی کا کردار‘‘ کے عنوان پر منعقدہ سیمینارکو وقت کی ضرورت قرار دیا گیا ہے۔
قرارداد میں اسرائیلی جارحیت، اسلامی مقدسات کی بے حرمتی اور فلسطینیوں پہ عرصہ حیات تنگ کرنے کی مذمت اورفلسطینیوں سے اظہار ہمدردی اوران کے کاز کی حمایت کی گئی ہے ،اسی طرح سے عراق افغانستان وغیرہ میں مسلسل ہورہے جانی ومالی نقصانات پراظہار تشویش کیا گیا ہے اور انصاف پسند اقوام عالم سے یہ اپیل کی گئی ہے کہ متعلقہ ممالک میں اقتدار اعلیٰ کو عوام کے حوالہ کیا جائے۔قرارداد میں ملی وجماعتی اہم شخصیات کی وفیات پر بھی اظہار رنج وغم اور ان کے پسماندگان سے اظہار تعزیت کیاگیا

View items...

DSCN9173مرکزی جمعیت اہل حدیث ہند کے زیراہتمام دسواں آل انڈیا ریفریشر کورس برائے ائمہ، دعاۃ و معلمین بحسن و خوبی اختتام پذیر ، علماء و دانشوران کا خطاب
دہلی:۸۱اکتوبر ۵۱۰۲ء
تعلیم وتربیت دونوں لازم و ملزوم ہیں، ورنہ صرف تعلیم بسا اوقات فرد اور معاشرہ کے لیے مضر اور وبال ثابت ہوتی ہے ۔ اعلیٰ تعلیم کے ساتھ ساتھ صالح تربیت سے انسان کے اندر اعلیٰ اخلاقی صفات پیدا ہوتے ہیں، کردار بلند ہوتا ہی، احترام انسانیت کا جذبہ پیدا ہوتا ہے اور ملک و ملت کے لیے کچھ کر گزرنے کا شوق فراواں ہوتا ہی۔ البتہ اچھی تربیت کے لیے استاذ کی صحبت ضروری ہی۔ یہ صحبت فکر میں پختگی ، پرواز میں بلندی ، روح میں بالیدگی اور کردار وعمل میں اعتدال وتوازن پیدا کرتی ہی۔ قرون اولیٰ میں ا س جانب خاص توجہ دی جاتی تھی۔ آج بھی مملکت سعودی عرب کے اندر مشائخ کی مجالس میں اہل علم خاص طور سے بیٹھنے کا اہتمام کرتے ہیں اور ان روحانی صحبتوں سے فیضیاب ہوتے ہیں۔ آج شخصی تربیت کے اس طریقے کو رواج دینے کی ضرورت ہے ۔ ان خیالات کا اظہار مرکزی جمعیت اہل حدیث ہند کے ناظم عمومی مولانا اصغر علی امام مہدی سلفی نے کیا۔ موصوف مرکزی جمعیت اہل حدیث ہند کے زیر اہتمام دسواں آل انڈیا ریفریشر کورس برائے ائمہ ، دعاۃ و معلمین کے اختتامی اجلاس میں ملک کے کونے کونے سے آئے ہوئے ائمہ ، دعاۃ و معلمین اور حاضرین سے کل مورخہ ۷۱ اکتوبر ۵۱۰۲ء بعد نماز مغرب اہل حدیث کمپلیکس اوکھلا نئی دہلی میں خطاب کررہے تھی۔
ناظم عمومی نے کہا کہ ہماری بنیاد و اساس روحانی تھی لیکن آج ہم مادیت کا مقابلہ مادیت سے کرنے لگے ہیں حالانکہ مادیت کا مقابلہ روحانیت سے ہونا چاہئی۔

DSCN8748مرکزی جمعیت اہل حدیث ہند کے زیر اہتمام دسواں کل ہند ریفریشر کورس برائے ائمہ ،دعاۃ ومعلمین کا حسن آغاز
نئی دہلی۔۱۱اکتوبر، کسی بھی شخص کو کوئی کام بحسن وخوبی انجام دینے کے قابل بنانے کے لئے تر بیت وٹریننگ کی اشد ضرورت ہوتی ہے پھر دعوت وارشاد جیسا مہتم بالشان عمل اس سے کیونکر مستثنی رہ سکتاہے ۔ائمہ دعاۃ ومعلمین کے لئے سب سے پہلے اس بات کی ضرورت ہے کہ وہ پختہ علم حاصل کریں تاکہ دوسروں کو کچھ دینے کے قابل بن سکیں اس لئے پہلے مرحلہ میں سنیں، سمجھیں اور اس کو دل میں جگہ دیں پھر اس کے مطابق اپنے آپ کو ڈھالیں۔دوسرامرحلہ نفس کو عملی میدان میں اترنے کیلئے آمادہ کرنے کا ہے اور اس راستہ میں جو بھی مشکلات آئیں ان کا ڈٹ کر مقابلہ کیاجائی۔ نبی صلی اللہ علیہ وسلم سب سے زیادہ حسن تربیت سے آراستہ ہونے کے باوجود ہمہ وقت آپ کی تربیت وحفاظت کی جاتی تھی اور شیطان کے وسوسوں سے محفوظ رہنے کے گرسکھائے جاتے تھے یہی آپ کی معصومیت تھی۔ آپ نے فرمایا: ’’ادبنی ربی فاحسن تادیبی‘‘ یعنی اللہ تعالیٰ نے میری بہت اچھی تربیت کی ہی۔اگر آپ کوئی پودا لگاتے ہیں توجس طرح اس پودے کا ہمہ وقت خیال رکھناپڑتاہے اسی طرح ہمیں اپنے صلاحیتوں کو پروان چڑھانے کے لئے پوری سنجیدگی سے کام کرنا پڑیگا تبھی بہتر نتائج کی توقع کی جاسکتی ہی۔تبھی وہ پروان چڑھتاہے اگر اس سے تربیت کی اہمیت کاپتہ چلتاہے ۔ ان خیالات کا اظہار ناظم عمومی مرکزی جمعیت اہل حدیث ہند مولانا اصغرعلی امام مہدی سلفی دسویں کل ہند دورہ تدربیہ برائے ائمہ ، دعاۃ و معلمین کے افتتاحی اجلاس کو خطا ب کرتے ہوئے کیا۔ ناظم عمومی نے شرکاء دورہ کو نصیحت آمیز انداز میں کہا کہ آپ ریفریشر کورس سے فارغ ہوں تو اس قابل ہوجائیں کہ اپنی بات سامنے والے کے دل میں پوری طرح اتاردیں اور اپنا جوہر دوسروں کو منتقل کرنے کے لائق بن جائیں۔ ایک دوسرے کے تجربات اور علوم سے فائدہ اٹھائیں اور اپنے اپنے دائرہ کار میں اس سے فائدہ پہنچانا چاہئی۔

20150830 134858
اہم ملی،ملکی اورجماعتی مسائل پر غوروخوض
نئی دہلی:۰۳اگست ۵۱۰۲ء
مرکزی جمعیت اہل حدیث ہند کی پریس ریلیز کے مطابق آج اہل حدیث کمپلیکس،اوکھلا،نئی دہلی میں مرکزی جمعیت اہل حدیث ہند کی مجلس عاملہ کی ایک اہم میٹنگ امیرجمعیت محترم حافظ محمدیحيٰ دہلوی حفظہ اللہ کی صدارت میں منعقد ہوئی جس میں ملک کے بیشتر صوبوں سے آئے اراکین اور صوبائی ذمہ داران نے شرکت کی۔ناظم عمومی اورناظم مالیات نے اپنی رپورٹیں پیش کیںجن پر مجلس نے اطمینان و خوشی کا اظہارکیا ۔میٹنگ میںجمعیت کے کاموں کا بھی جائزہ لیا گیااور آئندہ دعوتی،تعلیمی، تنظیمی اوررفاہی منصوبوں کومہمیزدینے کے لئے غور کیا گیا۔

نئی دہلی: ۹۲اگست ۵۱۰۲ءDSCN8587

مرکزی جمعیت اہل حدیث ہند کے زیراہتمام سولہویں کل ہند مسابقہ حفظ وتجوید وتفسیر قرآن کریم کا شاندارافتتاح آج یہاں اہل حدیث کمپلیکس اوکھلا میں مرکزی جمعیت کے مفتی مولانا جمیل احمد مدنی کی صدارت میں ہوا۔
مرکزی جمعیت اہل حدیث ہند کے ناظم عمومی مولانا اصغرعلی امام مہدی سلفی نے ہندوستان کے گوشہ گوشہ سے آئے تمام مشارکین اور معززحکم ومہمانان گرامی کا خیر مقدم کرتے ہوئے کہاکہ قرآن پوری دنیاکے لئے امن وشانتی کا پیغام اورہرطرح کی کامیابی کا وسیلہ اور پوری انسانیت کے لئے اللہ کا آخری پیغام ہی۔افتتاحی اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے انہوںنے کہا کہ آج پوری دنیا کو سیدھی راہ کی تلاش ہے ،ہرشعبہ کے لوگ بھٹک رہے ہیں ایسے میں قرآن ہماری کامیابی وکامرانی کا سب سے بڑا ذریعہ ہی۔ انہوںنے کہا کہ قرآن کو پڑھنے والے اور پڑھانے والے روئے زمین پرسب سے افضل ہیں اورآخرت میں بھی سب سے افضل ہوںگی، مدارس کو دین کا قلعہ قرار دیا اور اس کے متعلقین کی جم کر تعریف کی۔ آج دنیا میں ہماری بابت جو تصورہے اس کے تناظرمیں ہمارے لیے یہ مزیدضروری ہوجاتا ہے کہ ہم دنیا کے سامنے قرآن کا عملی نمونہ پیش کریں۔ ناظم عمومی نے قرآن کودنیا کی سب سے بڑی نعمت قرار دیتے ہوئے کہا کہ قرآن کا عالم سلیقہ مند ہوتاہی۔افتتاحی اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے مولانا اصغر علی امام مہدی سلفی نے کہا کہ دنیا میںقرآن کے حقوق ادا کرنے والے آخرت میں بھی معزز وسرخروہوںگے اس لئے ہم اپنے اندر قرآن کے ذریعہ تقوی پیدا کریں۔

Page 3 of 16

The Collective Fatwa against Daish and those of its ilk

ہمارے رسائل وجرائد

http://ahlehadees.org/modules/mod_image_show_gk4/cache/al-isteqamah2gk-is-214.jpglink
http://ahlehadees.org/modules/mod_image_show_gk4/cache/islahe-samaj2gk-is-214.jpglink
http://ahlehadees.org/modules/mod_image_show_gk4/cache/jareeda-tarjumah2gk-is-214.jpglink
http://ahlehadees.org/modules/mod_image_show_gk4/cache/the-symple-truth2gk-is-214.jpglink
«
»
Loading…