مرکز کی سرگرمیاں

Children categories

مرکزی جمعیت اہل حدیث ہند کی مجلس عاملہ کا اہم اجلاس اختتام پذیر ملک وملت وانسانیت سے متعلق مسائل زیر غور

مرکزی جمعیت اہل حدیث ہند کی مجلس عاملہ کا اہم اجلاس اختتام پذیر ملک وملت وانسانیت سے متعلق مسائل زیر غور (0)

۳۴ویں آل انڈیا اہل حدیث کانفرنس بنگلور میں
نئی دہلیـ۱۹مارچ۲۰۱۷ء
مرکزی جمعیت اہل حدیث ہند کی پریس ریلیز کے مطابق آج مورخہ۱۹مارچ۲۰۱۷ء کو مرکزی جمعیت اہل حدیث ہند کی مجلس عاملہ کا ایک اہم اجلاس زیر صدارت جناب حافظ محمد عبدالقیوم نائب امیر مرکزی جمعیت اہل حدیث ہند بمقام اہل حدیث کمپلیکس، اوکھلا، نئی دہلی منعقد ہوا جس میں تقریبا ۲۱ صوبوں سے بڑی تعداد میں اراکین مجلس عاملہ ومدعوئین خصوصی نے شرکت کی۔ اور ملک وملت نیزجماعت کو درپیش مسائل کاجائزہ لیا ۔ناظم عمومی مولانا اصغر علی امام مہدی سلفی مرکزی جمعیت اہلحدیث ہند کی ہمہ جہت دعوتی، تعلیمی، ملی وانسانی خدمات سے متعلق رپورٹ اور ناظم مالیات الحاج وکیل پرویز صاحب نے سالانہ حساب کتاب پیش کیا جس پر موقر اراکین نے اظہار اطمینان و مسرت فرمایا۔ اجلاس میں من جملہ دیگر امور کے طے پایا کہ ۳۴ویں آل انڈیا اہل حدیث کانفرنس بنگلور میں ہوگی۔ نیز یہ کہ صوبائی جمعیات کے انتخابات وقت کے اندر ہوں۔جمعیت کی تعمیر وترقی کے لیے منصوبے زیر غور آئے۔ اتفاق رائے سے کئی اہم ملی، ملکی اور جماعتی حالات کے پیش نظر فیصلے کئے گئے اور کافی غور وخوض کے بعد ملک وملت اور انسانیت سے متعلق درج ذیل قرار دادیں پاس کی گئیں۔

sمجلس عاملہ کی قرارداد میں اسلامی تعلیمات کے مطابق زندگی گزارنے اور برادران وطن کو اسلامی تعلیمات سے روشناس کرانی، امن وشانتی کا پیغام عام کرنے ،بھائی چارہ وقومی یکجہتی کے کوشش کرنے پر زوردیاگیا۔اجلاس میںبابری مسجد قضیہ کے جلد ازفیصل کرانے ، بے قصور مسلم نوجوانوں کو ہراساں کرنے والے خاطی پولس افسران کو قانون کے دائرے میں لانے اور ملک میں بڑھتی مہنگائی پر قابو پانے کی اپیل کی گئی ہے۔ علاوہ ازیں برادران وطن اورمسلمانوں سے اپیل کی گئی ہے کہ وہ شراب نوشی ودیگر منشیات سے پرہیز کریں اورنوجوانوں میں پائی جانے والی اخلاق باختہ برائیوں کو دور کرنے کے لئے مخلصانہ کوشش کریں۔
مجلس عاملہ کی قرارداد میں انسداد فرقہ وارانہ فساد بل کو پاس کرانے اور انتظامیہ کو فسادات میں جواب دہ بنانے کی اپیل اور ملک میں عصمت دری کے واقعات پر اظہار تشویش کیا گیاہے۔ قرار داد میں پولس اورنیم فوجی دستوں میں مسلم نمائندگی کویقینی بنانے کے حکومتی فیصلہ کا خیر مقدم کیا گیاہے۔ مسلمانوں کے خلاف دھمکی آمیز و نفرت انگیز بیانات پراظہار تشویش کیا گیا۔اجلاس میںجماعت کے اندر انتشار وخلفشار پیداکرنے والوں اورتنظیمی امور کو سبوتاژ کرنے والوںنیزجمعیت کے ذمہ داران پربے سروپاالزام لگانے والوں کی بھی مذمت کی گئی اور وسیع تر جماعتی مفادات کے پیش نظرانہیں اپنی حرکتوں سے باز رہنے کی تلقین کی گئی۔
مجلس عاملہ کی قرارداد میں داعش اور اس کی دہشت گردی کی مذمت اور مرکزی جمعیت اہل حدیث ہند کے زیراہتمام ’’داعش اوردہشت گردی کی بیخ کنی میں قومی یکجہتی کا کردار‘‘ کے عنوان پر منعقدہ سیمینارکو وقت کی ضرورت قرار دیا گیا ہے۔
قرارداد میں اسرائیلی جارحیت، اسلامی مقدسات کی بے حرمتی اور فلسطینیوں پہ عرصہ حیات تنگ کرنے کی مذمت اورفلسطینیوں سے اظہار ہمدردی اوران کے کاز کی حمایت کی گئی ہے ،اسی طرح سے عراق افغانستان وغیرہ میں مسلسل ہورہے جانی ومالی نقصانات پراظہار تشویش کیا گیا ہے اور انصاف پسند اقوام عالم سے یہ اپیل کی گئی ہے کہ متعلقہ ممالک میں اقتدار اعلیٰ کو عوام کے حوالہ کیا جائے۔قرارداد میں ملی وجماعتی اہم شخصیات کی وفیات پر بھی اظہار رنج وغم اور ان کے پسماندگان سے اظہار تعزیت کیاگیا

View items...

دہلی:۱۳/جنوری ۴۱۰۲ء
مرکزی جمعیت اہل حدیث ہند کے زیر اہتمام بتیسویں آل انڈیا اہل حدیث کانفرنس میں جو کہ آئندہ ۱ـ۲/مارچ ۴۱۰۲ء کو دہلی میں منعقد ہورہی ہے ، محترم امام مسجد نبوی سماحۃ الشیخ عبدالمحسن بن محمد عبدالرحمن القاسم حفظہ اللہ کی تشریف آوری اور کانفرنس کے موضوع ’’اعتدال ـامن عالم اورفلاح انسانیت کا ضامن‘‘ کی اہمیت و معنویت کی وجہ سے عوام کے اندر کافی جوش و خروش پایاجارہا ہی۔ ملک و بیرون ملک سے اہم شخصیات کی شرکت کے خطوط اور پیغامات موصول ہورہے ۔ ان باتوں کی جانکاری مرکزی جمعیت اہل حدیث ہند کے ناظم عمومی مولانا اصغر علی امام مہدی سلفی نے دورہ بہار، جھارکھنڈ اور مغربی بنگال اور حیدر آباد سے واپسی کے بعد ذرائع ابلاغ کے نام جاری ایک بیان میں دی۔
انہوں نے کہا کہ محترم امام مسجد نبوی سماحۃ الشیخ عبدالمحسن بن محمد عبدالرحمن القاسم حفظہ اللہ ۲ /مارچ ۴۱۰۲ کو رام لیلا میدان میں مختلف نمازوں کی امامت اور کانفرنس کو خطاب فرمائیں گی۔
ناظم عمومی نے کہا کہ کانفرنس کے تئیں بیداری پیدا کرنے اور اسے ہر طرح سے کامیاب بنانے کے لیے ذمہ داران مرکزی جمعیت اہل حدیث ہند صوبائی جمعیات اہل حدیث کی تنسیق سے ملک کے مختلف صوبوں کا دورہ کرر ہے ہیں اور مرکزمیں بھی ذمہ داران جمعیت اور مختلف کمیٹیوں کے کنوینروں کی میٹنگوں کا سلسلہ جاری ہی۔
انہوں نے مزید کہا کہ کل ہی ایک اعلی سطحی وفد جس میں ناظم عمومی کے علاوہ ناظم مالیات الحاج وکیل پرویز ، نائب ناظم حافظ عبدالقیوم شامل تھی۔ حیدر آباد سے واپس آیا ہی۔ شرکائے وفد نے صوبائی جمعیت اہل حدیث آندھراپردیش کے ذمہ داران کی معیت میں صوبہ آندھراپردیش کے مختلف اضلاع کا دورہ کیا۔ اہم شخصیات سے ملاقاتیں کیں اور کانفرنس کے پیغام کو عام کیا۔
انہوں نے کہا کہ ایسے وقت میں جب کہ عملی وفکری بے اعتدالیوں کی وجہ سے ملک ومعاشرہ مختلف قسم کی مشکلات و مصائب سے دوچار ہی، ضرورت ہے کہ اعتدال و میانہ روی کی اہمیت و معنویت اجاگر کی جائے تاکہ دنیا امن و سکون اور دنیوی و اخروی فلاح و سعادت سے ہمکنار ہوسکی۔ مرکزی جمعیت اہل حدیث ہند انہیں مقاصد کے تحت بتیسویں آل انڈیا اہل حدیث کانفرنس دہلی کے اندر منعقد کررہی ہی۔

دہلی:۷۱/جنوری ۴۱۰۲ء
مرکزی جمعیت اہل حدیث ہندسے جاری اخباری بیان کے مطابق آج مورخہ ۷۱جنوری ۴۱۰۲ء کو مرکزی جمعیت اہل حدیث ہند کے ہیڈ کوارٹر س اہل حدیث منزل جامع مسجد دہلی میں تیسویں دوروزہ آل انڈیا اہل حدیث کانفرنس بعنوان: ’’ اسلامی اعتدالـ امن عالم اور فلاح انسانیت کا ضامن ‘‘ کے سلسلے میں مجلس اداری وانتظامی کی ایک اہم میٹنگ زیر صدارت مولانا اصغرعلی امام مہدی سلفی ناظم عمومی مرکزی جمعیت اہل حدیث ہند منعقدہوئی ۔ جس میں کانفرنس سے متعلق اب تک کی تیاریوں کا جائزہ لیا گیا اورآئندہ کے لئے لائحہ عمل تیار کیاگیا۔اس میٹنگ میں صوبائی جمعیت اہل حدیث دہلی کے امیر مولانا عبدالستارسلفی، اور صوبائی جمعیت اہل حدیث مغربی یوپی کے علاوہ دہلی ،مغربی یوپی وغیرہ کی اہم شخصیات مثلا الحاج قمرالدین وحافظ محمد عمروغیرہ بھی شریک ہوئیں۔ ان حضرات نے بتایا کہ کانفرنس کے سلسلے میں ملک کے اند رکافی جوش وجذبہ پایا جارہا ہے ۔ان شاء اللہ آئندہ یکم ودومارچ ۴۱۰۲ء کورام لیلا میدان دہلی میں منعقد ہونے والی یہ کانفرنس جس میں محترم امام حرم مدنی کی شرکت کی قوی امیدہی۔ہراعتبار سے کامیاب ترین ہوگی۔اورملک وملت اورانسانیت کے لیے مفید ترثابت ہوگی

روزنامہ انقلاب مجریہ ۱۳/دسمبر ۳۱۰۲ء کے صفحہ اول پر ایک صاحب مولانا سلمان ندوی کی تحریر پر نظر پڑی، جسے جلی حروف میں دعوت مباہلہ کے نام سے شائع کیا گیا تھا جو در اصل مسئلہ مباہلہ سے انتہائی لاعلمی یا مباہلہ کے نام پر کھلا مغالطہ ہی۔ تحریر مضمو ن نگار کی سیاسی فکر کی غماز ہے جو ہر گز لائق التفات نہیں تھی۔
ولقد امر علی اللئیم یسبنی
فمضیت ثمۃ قلت لا یعنینی
ایک اور دیوانے نے شیخ الاسلام علامہ ثناء اللہ امرتسری رحمہ اللہ سابق ناظم عمومی مرکزی جمعیت اہل حدیث ہند کو اسی طرح دعوت مباہلہ دی تھی اور اپنے رسوا کن انجام سے دو چار ہوا تھا کیا صاحب تحریر کو اس مباہلاتی بھائی کا انجام نہیں معلوم ہی؟ مباہلہ بازی میں دونوں یکسا ں ہیں ،فرق یہ ہے کہ وہ انگریز کا خود کاشتہ پودہ تھا، یہ حق دشمن، خوارج کا گماشتہ لگتا ہی۔ لہٰذا جو شخص مولانا کی افتاد طبع سے واقف ہے ، اسے نہ تعجب ہے اور نہ افسوس ۔افسوس صرف اس امر پر ہے کہ وہ ایک اہم خانوادہ اور ایک بڑے مشترکہ ادارہ سے متعلق ومنسلک ہے ۔

بتیسویں آل اندیا اہل حدیث کانفرنس کی تیاریوںکی پیش رفت پر اظہار اطمینان
نئی دہلی۔۵جنوری۴۱۰۲ ،مرکزی جمعیت اہل حدیث ہندکی پریس ریلیز کے مطابق آج اہل حدیث کمپلیکس،اوکھلا،نئی دہلی میں مجلس عاملہ کی ایک اہم میٹنگ امیرجمعیت محترم حافظ محمدیحيٰ دہلوی صاحب کی صدارت میں منعقد ہوئی جس میں ملک کے بیشتر صوبوں سے آئے اراکین،مدعوئین خصوصی اورصوبائی ذمہ داران نے شرکت کی۔ناظم عمومی اورناظم مالیات نے اپنی رپورٹ پیش کی اور شرکاء نے ان پرمکمل اطمینان کا اظہارکیا۔ میٹنگ میںجمعیت کے تمام شعبوں کی کارکردگی کاجائزہ لیا گیااور آئندہ دعوتی،تعلیمی ، تنظیمی اوررفاہی منصوبوں کوتیزی سے بروئے کارلانے پر غور کیا گیا۔ اجلاس میں بتیسویںآل انڈیااہل حدیث کانفرنس کے انعقادکی تیاریوں کاجائزہ بھی لیاگیااور کانفرنس کی مجلس استقبالیہ کے صدر ڈاکٹر عبدالعزیز عبیداللہ مبارکپوری اورکنوینرڈاکٹر عبداللطیف کندی کے مشورے سے متعلقہ کاموں کی بحسن وخوبی انجام دہی کے لئے مزیدکمیٹیوںکی تشکیل اورانہیںاورزیادہ فعال بنانے پر زوردیاگیا۔اس موقعہ پرتقریبا تمام صوبائی جمعیتوں اور متعدد اشخاص نے کانفرنس کے لئے گراں قدر چندے کی پیش کش کی۔ میٹنگ میں مظفرنگر کے فسادات کے متاثرین کی ریلیف وبازآبادکاری کے لئے جماعت کی طرف سے کئے گئے اقدامات پربھی اظہاراطمینان کیا گیا ۔
پریس ریلیزکے مطابق میٹنگ میںحالات حاضرہ کے تناظرمیںعالمی، ملکی وملی مسائل بھی زیرغور رہے اور ان سے متعلق تجاویز وقرار داد منظور کی گئیں۔مجلس عاملہ کی قرارداد میںمملکت سعودی عرب کے خلاف منفی پروپیگنڈہ کرنے والوں کی مذمت اور مسلمانوں کی فلاح وترقی کے لئے کمیشنوں کی سفارشات کے نفاذ کا مطالبہ نیزہم جنسی کو سپریم کورٹ کے ذریعہ جرم قرار دینے کا خیرمقدم اورتمام سیاسی پارٹیوں اور سوسائٹیوں سے اس بابت تعاون کی اپیل کی گئی ہے ۔قرار داد میں دہلی کی نئی سرکار کی بہتر پیش رفت پر بھی اظہار اطمینان کیاگیا۔
قرارداد میں کہاگیاہے کہ مسلم تنظیمیں وافراد ایک دوسرے پر طعن وتشنیع سے گریز کریں اور حکومت ہند سے مطالبہ کیاگیاہے کہ عربی وفارسی کو یوپی ایس سی کے امتحان میں اختیاری مضمون کی حیثیت سے شامل کرے علاوہ ازیں فرقہ وارانہ فساد بل کے نہ پاس ہونے پر اورفسادات زدگان کی بازآباد کاری میں لاپرواہی پر تشویش کا اظہار کیاگیاہے ۔اجلاس میں اس بات کا بھی اعادہ کیاگیاکہ مرکزی جمعیت اہل حدیث ہندپوری طرح متحد ہے اوراس کے ذمہ داران کو پوری جمعیت کا مکمل اعتماد حاصل ہے ،بعض لوگ جو اصلاح کے نام پر انتشار پھیلانے کی کوششیں کررہے ہیں ان کی تگ و دو لائق مذمت ہے لہٰذاجماعت کو اس سے ہوشیار رہنے کی ضرورت ہی۔
مجلس عاملہ نے بٹلہ ہاؤس انکاؤنٹر کی تحقیقات کے مطالبہ کا اعادہ ،جیلوں میں بند مسلم نوجوانوں کی ضمانت پر رہائی اورباعزت بری ہونے والے مسلم نوجوانوں کے نقصان کی تلافی کا پرزور مطالبہ کیاگیاہی۔ بے روزگاری ،بدعنوانی،شام میں ظلم وبربریت اور عالمی طاقتوں کی بے حسی پر تشویش اور انگولا میں اسلام پر پابندی کو عالمی قانون کی خلاف ورزی قرار دیا گیا ہی۔ قرارداد میں دہلی میں رائے دہندگان کی جرأتمندانہ رائے دہی کو جمہوریت اور عوام کی فتح قراردیا گیا ہے اور جماعت اہل حدیث کے نامور عالم دین مولانا عبدالسلام رحمانی،استاذ جامعہ سراج العلوم جھنڈانگر مولاناعبدالمجید مدنی اورصوبائی جمعیت اہل حدیث ہریانہ کے نائب امیرمولاناابراہیم کے انتقال کو جماعت کا ناقابل تلافی نقصان قراردیتے ہوئے پسماندگان سے اظہار تعزیت کیا گیا ہی۔
جاری کردہ
مرکزی جمعیت اہل حدیث ہند

Page 10 of 16

The Collective Fatwa against Daish and those of its ilk

ہمارے رسائل وجرائد

http://ahlehadees.org/modules/mod_image_show_gk4/cache/al-isteqamah2gk-is-214.jpglink
http://ahlehadees.org/modules/mod_image_show_gk4/cache/islahe-samaj2gk-is-214.jpglink
http://ahlehadees.org/modules/mod_image_show_gk4/cache/jareeda-tarjumah2gk-is-214.jpglink
http://ahlehadees.org/modules/mod_image_show_gk4/cache/the-symple-truth2gk-is-214.jpglink
«
»
Loading…